AIK QADAM MANZIL KI JANIB BY HAFIA

اوئے حد ادب ، بدتمیز رکو ذرا،،،! چپل اڑتی ہوئی سیدھی علی کے سر پر لگی تو وہ بلبلا کر پلٹا -ٹھہر جاؤ تم جنگلی کہیں کی ، اس نے وہی چپل اٹھائی اور ہنی کی سمت پھینک دی ، اوراگلے ہی لمحے ہنی زمین پر بیٹھ کر رونا شروع کر چکی تھی _سر گھٹنے پر رکھے دونوں بازو خود کے گرد حمائل کر لیے ۔۔ نوٹنکی کہیں کی ، علی نے دانت پیسے مگر اس باجے کو اب اسے ہی بند کرنا تھا ورنہ پاپا ،،، اسے لگتا تھا اسکے نہیں ہنیہ کے باپ ہیں _وہ آھستہ سے چلتا اس کے قریب آ کر زمین پر بیٹھ گیا اندازہ لگانے کی کوشش کی کہ رو بھی رہی ہے یا نہیں مگر وہ کچھ اور سمٹ گئ تو چار و ناچار اسے بولنا پڑا ارے ہنی یار سوری رئیلی سوری ،، یار دیکھو جہاں کہو گی لے جاؤں گا بس چپ کر جاؤ بتاؤ کدھر جانے کا کہہ رہی تھی ؟

JOIN OUR WHATSAPP CHANNEL

Welcome to NOVELSCLUBB! Thanks for visiting..

Novelsclubb is a newly launched website specially designed for social media writers and readers. Novelsclubb’s aim is to provide best quality pdf for writers and readers for free. NOVELCLUBB web offers the best types of novels. This site has a vast collection of Urdu novels where you will find good and quality material to study without vulgarity and bold content.
If you want to publish your novel, article, afsana on our website contact us on our given contacts pages.
Instagram: @novelscclubb
F.B: novelsclubb
Whatsapp:03257121842
Gmail: novelsclubb@gmail.com

Download Link is given below:

ONLINE READ:

PDF DOWNLOAD LINK:

AIK QADAM MANZIL KI JANIB

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *