IK BAAR KAHO TUM MERE HO PDF

وہ اب اپنی اریبہ سے کبھی نہیں مل پائے گا لیکن یہ سزا اس نے خود کیلیے خود تجویز کی تھی
“اریبہ۔۔۔۔”وہ چیختے ہوئے اریبہ کوپکار کر ذمین پر گھٹنوں کے بل بیٹھ گیا اور اس کےپیروں پکڑ کر لیا
“اریبہ۔۔۔اریبہ تم مجھے اکیلا چھوڑ کے نہیں جا سکتی۔۔۔۔اریبہ۔۔۔۔”وہ زور زور سے چیخ رہا تھا مرد ہو کر وہ رو رہا تھا پھوٹ پھوٹ کر رو رہا تھا حمیدہ بیگم نے اسے سنبھالنا چاہا لیکن اس نے سختی سے اریبہ کے پیروں کو جکڑا
“اریبہ مجھے معاف کردو۔۔۔بس ایک دفعہ واپس آجاؤ میں وعدہ کرتا ہوں میں تمہیں کبھی کوئی دکھ نہیں دونگا۔۔۔بسایک دفعہ واپس آجاؤ۔۔۔۔”وہ بے بسی کی آخری حد پر تھا چیخ چیخ کر اپنی اریبہ کوپکار رہاتھا جو کبھی واپس نہ آنے کیلئے چلی گئی تھی جو ہمیشہ ہمیشہ کیلئے اس کوچھوڑ گئی تھی
“میری اریبہ مجھے چھوڑ کر نہیں جا سکتی۔۔۔۔امی پلیز ایک بار اسے واپس لے آئیں۔۔۔میری اریبہ کو واپس لے آئیں میں نہیں رہ سکوں گا اس کے بغیر۔۔۔۔”وہ ان کے سینے سے لگے اریبہ کو پکارتے ہوئے رو رہا تھا اس کی زندگی میں بس رونا ہی تو رہ گیا تھا

JOIN OUR WHATSAPP CHANNEL

Welcome to NOVELSCLUBB! Thanks for visiting..

Novelsclubb is a newly launched website specially designed for social media writers and readers. Novelsclubb’s aim is to provide best quality pdf for writers and readers for free. NOVELCLUBB web offers the best types of novels. This site has a vast collection of Urdu novels where you will find good and quality material to study without vulgarity and bold content.
If you want to publish your novel, article, afsana on our website contact us on our given contacts pages.
Instagram: @novelscclubb
F.B: novelsclubb
Whatsapp:03257121842
Gmail: novelsclubb@gmail.com

Download Link is given below:

PDF DOWNLAOD LINK:

IK BAAR KAHO TUM MERE HO COMPLETE

ONLINE READ LINK:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *