KHOONI PANJE BY SONIA HASSAN

وہ لوگ بڑی مشکل سے جگہ جگہ بکھرے ہوۓ ٹکڑوں میں سےکیمروں کے میموری کارڈ ڈھونڈھ پاۓ اور ہوٹل واپس آگۓ
لگتا ہے کہ وہ لوگ ہمارے بارے میں جان گۓ ہیں مگر حیرت کی بات یہ ہے کہ انہوں نے ہمیں کچھ کہا کیوں نہیں
عادل لیپ ٹاپ آن کرتے ہوۓ بولا
شاید وہ لوگ ہماری طرف سے خطرہ محسوس نہ کر رہے ہوں ندا بولی
نہیں اگر خطرہ محسوس نہ کرتے تو کیمرے نہ توڑتے بات کچھ اور ہے صارم نے میموری کارڈ لگا کر ویڈیو پلے کرتے ہوۓ جواب دیا
سارے میموری کارڈز کی ویڈیوز لیپ ٹاپ میں سیو کرکے چلانے پر انہیں کافی کچھ دیکھنے کو ملا تھا صارم نے اپنے چینل کے مالک سے رابطہ کرکے اس کو کسی اچھے عالم دین کو ڈھونڈنے کا بولا جو کالے جادو کا توڑ کر سکیں
انہوں نے ان سے دو دن کا وقت مانگا ویسے بھی ابھی دوبارہ ان خونی ہاتھوں کے آنے میں دو تین دن باقی تھے اس لئے وہ لوگ آرام سے ہوٹل کے کمرے میں بیٹھے رہے تیسرے دن کی شام ان کے ہوٹل کے سامنے بہت سی گاڑیاں آکے رکی جن میں کچھ پولیس کی کچھ میڈیا والوں کی اور کچھ ان کے اپنے چینل والوں کی تھیں
چینل کا مالک اپنے ساتھ ایک روحانی علم کے ماہر بابا جی کو لے کر آیا تھا جن کے ماتھے کا محراب اور چہرے کا نور بتا رہا تھا کہ وہ سچ مچ کے عالم ہیں

ONLINE READ:

PDF DOWNLOAD LINK:

CLICK HERE TO DOWNLOAD

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *