YE TERI AWARGI BY SUMBAL AMBREEN COMPLETE

مجھے کہاں لے آئے ہو یہ کونسی جگہ ہے۔”
وہ اب باقائدہ طور پر چاروں طرف نظریں گھماتی متذبذب ہوتی اسکی طرف دیکھنے لگی۔ وہ بھاگ نہیں سکتی تھی دیکھ چکی تھی باہر کھڑے آدمی اسے بھاگنے نہیں دیں گے، اس لئے اب گھبرانے کی بجائے اپنے سوال پوچھنے میں ہی عافیت سمجھی۔
“یہ یہ ساشے کا اڈا ہے، میرا مطلب یہ ساشے کی کوٹھی ہے، جہاں وہ اپنے خاندان کے ساتھ رہتا ہے۔”

YE TERI AWARGI is written by SUMBAL AMBREEN . It is a gangster based novel.

COMPLETE PDF DOWNLOAD LINK:

YE TERI AWARGI BY SUMBAL AMBREEN

ONLINE READ:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *